• narrow screen resolution
  • wide screen resolution
  • fluid screen resolution
  • Increase font size
  • Default font size
  • Decrease font size
  • style1 color
  • style2 color
  • style3 color
بچت کی اہمیت

بچت کی اہمیت

بچت زر نقدسکہ رائج الوقت ہوتاہے ۔ جوایک فرد یا گھرانہ پس انداز کر کے مستقبل کے استعمال کیلئے رکھتا ہے ۔ مالی اہداف حاصل کر نے کیلے رقوم کا صحیح نظام کار ہونا چاہیے ۔ یہ بچتیں و افراد و اہل خانہ کو سخت ضرورت میں کام آتی ہیں ۔ باقاعدہ آمدنی سے اثاثے موجود میں آتے ہیں ۔ لوگ رقوم کو پس انداز کر کے بچاتے ہیں جب یہ آدھی ہو تی ہیں اور خرچ کر تے وقت احتیاط بر تتے ہیں ۔


بچت کے خدو خال یہ ہیں

  •   رقم جو الگ الگ رکھ کرمستقبل کی ضرورت کیلئے ہو ۔
  •  زیورات، چوپائے یاا راضی میں سرمایہ کاری کرنااور بوقت ضرورت فروخت کر کے زرنقد حاصل کرنا اثاثوں کا بنانا۔
  •  رقم کے انتظام واکرام میں ایک بنیادی کردار ۔

بچت کیوں کی جائے
آپ بچت کو متوقع اور غیر متوقع ضرورتوں میں خرچ کر سکتے ہیں ۔ یہ نقدی کی تسلسل ، مرضی کے مصارف ، اثاثے تخلیق کرنے میں اور کاروبار میں ممدو معاون ثابت ہو تی ہے۔ نا گہانی ضرورتوں ، آفات ارضی و سماؤں میں آپکی فوری ضرورت کرتی ہے اور بعد ازاں آمدنی ؍ جائیداد کے نقصان میں امرت کا کام دیتی ہے ۔


بچت مال اہداف حاصل کرنے میں بنیادی کردار ادا کر تی ہے

اس میں قلیل المدت (ہفتے و ماہ ) کی ضروریات مثلاً کاروباری مال کا خریدنا، اسکول فیس ادائیگی کا مسئلہ حل ہو جاتاہے ۔ وسطی قوت (ایک تا حدمالی ) کے مسئلے مثلاً گھر کی آرائش یا آبائی کا دورہ کرنے اور اسی طرح طویل المدت وسائل سے زائد کا حصہ ) مثلاًمکان کا خریدنا یا ریٹائر منٹ کی زندگی کے لیے معاملات بہ احسن و خوبی پورے ہو سکتے ہیں ۔